’پاکستانی ریاستی ادارے شیعوں کو تحفظ دینے میں ناکام رہے’،عالمی ہیومن رائٹس واچ Reviewed by Momizat on . انسانی حقوق کی بین الاقوامی تنظیم ہیومن رائٹس واچ کا کہنا ہے کہ پاکستانی حکومت فوج اور خفیہ اداروں کی جانب سے انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کی روک تھام میں ناکام ر انسانی حقوق کی بین الاقوامی تنظیم ہیومن رائٹس واچ کا کہنا ہے کہ پاکستانی حکومت فوج اور خفیہ اداروں کی جانب سے انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کی روک تھام میں ناکام ر Rating:
You Are Here: Home » Urdu - اردو » ’پاکستانی ریاستی ادارے شیعوں کو تحفظ دینے میں ناکام رہے’،عالمی ہیومن رائٹس واچ

’پاکستانی ریاستی ادارے شیعوں کو تحفظ دینے میں ناکام رہے’،عالمی ہیومن رائٹس واچ

’پاکستانی ریاستی ادارے شیعوں کو تحفظ دینے میں ناکام رہے’،عالمی ہیومن رائٹس واچ
انسانی حقوق کی بین الاقوامی تنظیم ہیومن رائٹس واچ کا کہنا ہے کہ پاکستانی حکومت فوج اور خفیہ اداروں کی جانب سے انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کی روک تھام میں ناکام رہی ہے۔ تنظیم کا کہنا ہے کہ فوج اور خفیہ اداروں کے اسی رویے کی وجہ سے شدت پسند شیعہ مسلمانوں کو نشانہ بنا رہے ہیں۔

جمعہ کو ریلیز ہونے والی تازہ رپورٹ ’ورلڈ رپورٹ 2013‘ میں تنظیم کا کہنا ہے کہ پاکستان میں سنہ 2012 میں جس طرح سے شیعہ مسلمانوں کو نشانہ بنایا گیا ہے کہ اس کے بعد وہاں انسانی حقوق کی صورتحال بدتر ہوئی ہے۔‘

پاکستان میں ہیومن رائٹس واچ کے ڈائریکٹر علی دایان حسن کے مطابق مذہبی شدت پسندوں نے شیعہ مسلمانوں کو تشدد کا نشانہ بنایا طالبان نے سکولوں، طلبہ اور اساتذہ پر حملے کیے ہیں۔‘

ہیومن رائٹس واچ کا کہنا ہے کہ 2012 میں پاکستان کی مذہبی اقلیتوں پر ہونے والے حملوں میں واضح اضافہ ہوا ہے۔

تنظیم کے مطابق رواں برس ٹارگٹ کلنگ کے واقعات میں پاکستان کے مختلف حصوں میں شیعہ مسلمانوں سے تعلق رکھنے والے تقریباً چار سو افراد کو ہلاک(شہید) کیا گیا ہے۔ ان میں تقریباً 125 ہلاکتیں(شہادتیں) بلوچستان میں ہوئی ہیں ۔

تنظیم نے پاکستانی حکومت پر زور دیا ہے کہ مرکزی اور صوبائی حکومتیں ان افراد کو جلد سے جلد سزا دیں جنہوں نے شیعہ مسلمانوں کو نشانہ بنایا ہے۔

About The Author

Number of Entries : 6115

Leave a Comment

You must be logged in to post a comment.

© 2013

Scroll to top