جب تک ان مظلوموں کے مطالبات کو پورانہیں کیا جا تا اس وقت تک قائد ملت جعفریہ اپنے وفد کے ساتھ کوئٹہ میں موجود رہیں گے Reviewed by Momizat on . جعفریہ پریس - کے نمائنہ کی رپورٹ کے مطابق شیعہ علماء کونسل پاکستان نے کوئٹہ میں کیرانی روڈ پر اہم پریس کانفرنس کیا ۔ پریس کانفرنس سے ہوئے شیعہ علماء کونسل خیبر جعفریہ پریس - کے نمائنہ کی رپورٹ کے مطابق شیعہ علماء کونسل پاکستان نے کوئٹہ میں کیرانی روڈ پر اہم پریس کانفرنس کیا ۔ پریس کانفرنس سے ہوئے شیعہ علماء کونسل خیبر Rating:
You Are Here: Home » Urdu - اردو » جب تک ان مظلوموں کے مطالبات کو پورانہیں کیا جا تا اس وقت تک قائد ملت جعفریہ اپنے وفد کے ساتھ کوئٹہ میں موجود رہیں گے

جب تک ان مظلوموں کے مطالبات کو پورانہیں کیا جا تا اس وقت تک قائد ملت جعفریہ اپنے وفد کے ساتھ کوئٹہ میں موجود رہیں گے

جب تک ان مظلوموں کے مطالبات کو پورانہیں کیا جا تا اس وقت تک قائد ملت جعفریہ اپنے وفد کے ساتھ کوئٹہ میں موجود رہیں گے
جعفریہ پریس – کے نمائنہ کی رپورٹ کے مطابق شیعہ علماء کونسل پاکستان نے کوئٹہ میں کیرانی روڈ پر اہم پریس کانفرنس کیا ۔ پریس کانفرنس سے ہوئے شیعہ علماء کونسل خیبر پختونخوا کے صوبائی صدر علامہ رمضان توقیر نے خطاب کیا اس موقع پر شیعہ علماء کونسل کے مرکزی رہنما اور وفاق المدارس کے جنرل سیکریٹری علامہ افضل حیدری اور شیعہ علماء کونسل بلوچستان کے صوبائی آرگنائیزر اور سکندر عباس گیلانی سمیت دیگر رہنما موجود تھے ۔ علامہ رمضان توقیر کا صحافوں سے خطاب جعفریہ پریس کے قارئین کے پیش خدمت ہے ؛
بسم اللہ الرحمن الرحیم
سب سے پہلے تو ہم آپ تمام صحافی حضرات کا شکریہ اداکرتے ہیں اس لئے کہ آپ ہماری آواز کو عوام تک پہنچانے کے لئے یہاں پرتشریف لائے اور ہمارے ساتھ تعاون فرمارہے ہیں ۔اس لئے بھی آپ کے بہت زیادہ مشکورہیں کہ اس سے پہلے بھی جو اسی کوئٹہ میں علمدارروڈ پر اسی قسم کا سانحہ ہواتھا اوراس موجودہ سانحہ میں جس طرح آپ اپناحق صحافت اداکررہے ہیں اور حکمرانوں تک ان مظلوموں کی آواز اوران جذبات کو جس انداز میں پہنچا رہے ہیں وہ واقعاً قابل تعریف اور قابل تحسین ہے۔ آپ کے علم میں ہے کہ سانحہ ہزارہ ٹائوون جوواقعاً تاریخ کاایک بدترین اورالمناک سانحہ ہے جس میں معصوم بچے ،خواتین ،اوربزرگ جو عام شہری تھے جو امن پسند شہری تھے جن کی کسی کے ساتھ کوئی دشمنی نہیں تھی ان کو بربریت کانشانہ بنایاگیا ۔آپ خود اپنی آنکھوں سے دیکھ رہے ہیں کہ لاشیں بری طرح جھلس چکی ہیںاورکئی بچوں کے اعضاء ٹکڑے ٹکڑے ہوگئے ہیں ورثا ان بکھرے ہوئے اعضاء کوجمع کر رہے ہیں پہچان نہیں ہورہی کہ یہ کس لاشہ ہے اورکون اس کے وارث ہیں۔ اس لئے یہ واقعاً ایک المناک واقعہ ہے ۔ اس واقعہ کی اطلاع ملتے ہی قائد ملت جعفریہ علامہ سید ساجدعلی نقوی یہاں کوئٹہ میں اپنے ہمراہ ایک اہم وفد کے ساتھ موجود ہیں ،اورجب تک ان مظلوموں کی آواز سنی نہیں جاتی ،اور ان کے مطالبات کو پورانہیں کیا جا تا اس وقت تک قائد ملت جعفریہ اپنے وفد کے ساتھ یہاں موجود رہیں گے ۔ہزارہ ٹاؤون کے شہداء کے لواحقین کے مطالبات سامنے آچکے ہیں ہم اپنی جماعت شیعہ علماء کونسل کی طرف سے قائد ملت جعفریہ کی تائید کے ساتھ ان مطالبات کی بھرپورحمایت کرتے ہیںکیونکہ یہ جائز اوراصولی مطالبات ہیں ان کی منظوری میں حکمرانوں کی طرف سے پس وپیش کی کیفیت ہماری سمجھ میں نہپیں آتی نہ جانے حکمران یاریاستی ادارے کیوں اتنی تأخیرکررہے ہیں نہ جانے ان مظلوموں سے مزید کونسا امتحان لیناچاہتے ہیں۔اظہاریکجہتی کے لئے نہ صرف پاکستان سے بلکہ بیرون ملک سے بھی جس میں ذراسابھی انسانیت کا درد ہے وہ ان مظلوموں کے ساتھ اظہاریکجہتی اور ان کے ساتھ اپنی حمایت کااعلان کرہے ہیں اوران کے ساتھ اپنے تعاون کی یقینی دہانی کرا رہے ہیں اوران کے ساتھ تعاون کررہے ہیں ۔ شیعہ علماء کونسل نے قائد ملت جعفریہ پاکستان کے فرمان پر ملک بھر میں احتجاجی دھرنوں کا اعلان کردیاہے بحمداللہ اس وقت ملک کی اہم شاہراہیں بند ہوچکی ہیں اگر ان مظلوموں کے جائز مطالبات منظورنہ ہوئے تو انشاء اللہ ملت تشیع اور ملت تسنن مل کر پورے پاکستان کومکمل طورپر جام کردیں گی اور اس وقت تک ملک جام رہے گاجب تک ان مظلوموں کے مطالبات کومنظورنہیں کیاجاتا۔ اسی حوالے سے ہم حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ شہداء کے ورثا اور لواحقین کے ان جائز مطالبات کو جلد ازجلد منظور کیاجائے تاکہ اس وقت پوری ملت پاکستان جو پریشانی کی حالت میں ہے خصوصاً بلوچستان اور کوئٹہ عوام جو خصوصی طورپر سوگوارہے حکومت کے دانشمندانہ فیصلہ کی وجہ یہ پریشانی دور ہوجائے گی اوراچھے اثرات مرتب ہوں گے اس لئے ہم حکومت سے پرزور مطالبہ کرتے ہیں ان کے مطالبات کو تسلیم کرے جوکہ جائز اوراصولی مطالبات ہیں اس لئے ہم آپ کے ذریعہ آواز پہنچاناچاہتے تھے جوآپ کے ذریعہ پہنچارہے ہیں اورہم شکریہ اداکرتے ہیں کہ جنتی بھی مقامی تنظیمیں ہیں یاباہر کی تنظیمیں ،بازاری حضرات ،مارکیٹ کے حضرات اورتجارحضرات سب کے سب جس طرح ان مظلوموں کے ساتھ اظہاریکجہتی کررہے ہیں اوران کے ساتھ تعاون کررہے ہیں ہم تہہ دل سے تمام طبقوں کاشکریہ ادا کرتے ہیںاور اس امید کے ساتھ کہ پاکستان اس وقت جن معروضی حالات کا شکارہے جوپریشانیان مملکت خداداد پاکستان کو لاحق ہیں یہ دور ہوں اورپاکستان کے دشمنوں کے جوناپاک عزائم ہیں ان کوناکام بنایاجاسکے ۔ عرصہ دراز سے پاکستان کے اندر یہ ایک سازش تھی سنّی شیعہ مسلمانوں کو آپس میں لڑانے کی جوکہ بحمد اللہ یہ ہماری قیادت کی مدبرانہ حکمت عملی کے نتیجہ ہے کہ آج تک پاکستان میں اس قسم کاکوئی مسئلہ پیش نہیں آیا کیونکہ سب جان چکے ہیں کہ یہ نہ سنّی کا مسئلہ ہے نہ شیعہ کایہ خا لصتاً دہشتگردی ہے اور پاکستان کی بنیادوں کو کمزورکرنے کی مذموم سازش ہے جسے ہم سب پاکستانیوں نے مل کر ناکام بناناہے خواہ وہ شیعہ ہے خواہ سنّی ہے دیوبندی ہے یابریلوی ہے جس بھی مسلک سے تعلق رکھتاہے اگروہ محب وطن پاکستانی ہے تو اس پرفرض بنتاہے کہ وہ ا پنے وطن عزیز پاکستان کی حفاظت کرے اور پاکستان کوبچانے میں اپنا بھرپوررول ادا کرے ہماری ملک دوستی کا اس سے بڑھ کر اورکوئی ثبوت نہیں ہوسکتا ۔ ہم نے ماضی میں اس ملک کے بنانے میں جس طرح اپنا خون بھی خرچ کیاہے، اپنا سرمایہ بھی خرچ کیاہے اوراپنی سوچ وفکر بھی خرچ کی ہے انشاء اللہ اب اس کے بچانے میں بھی کسی قسم کی قربانی دینے سے دریغ نہیں کریں گے۔ اگر ہمیں اس سے بھی زیادہ لاشیں اٹھانی پڑیں تو اٹھائیں گے لیکن پاکستان پر ہرگز کسی قسم کی آنچ تک نہیں آنے دیں گے ہم پاکستان کومستحکم کریںگے اور پاکستان کو طاقتور بنائیں گے اور ہم ا مید کرتے ہیںکہ سارے پاکستانی بلا تفریق مذہب ومسلک جس طرح اس المناک سانحے میں ہمارے ساتھ اس وقت شریک ہیں آئندہ بھی اگرخدانخواستہ کوئی اس طرح کا واقعہ پیش آتاہے تو ہم سب اسی طرح اکٹھے ہوں گے یکجان ہوں گے اور پاکستان کی دشمن استعماری طاقتوں اوران کے آلہ کاروں کی اس سازش کو انشاء اللہ مل کرناکام بنائیں گے۔

About The Author

Number of Entries : 6115

Leave a Comment

You must be logged in to post a comment.

© 2013

Scroll to top