لشکر جھنگوی، سپاہ صحابہ پنجاب میں آزادانہ کام کرتی ہیں، رپورٹ Reviewed by Momizat on . کاؤنٹر ٹیررازم ڈیپارٹمنٹ پنجاب کی 15 روزہ جائزہ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ لشکر جھنگوی اور سپاہ صحابہ سمیت کالعدم تنظیموں نے آزادانہ طور پر مختلف شہروں میں اہل ت کاؤنٹر ٹیررازم ڈیپارٹمنٹ پنجاب کی 15 روزہ جائزہ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ لشکر جھنگوی اور سپاہ صحابہ سمیت کالعدم تنظیموں نے آزادانہ طور پر مختلف شہروں میں اہل ت Rating:
You Are Here: Home » Urdu - اردو » لشکر جھنگوی، سپاہ صحابہ پنجاب میں آزادانہ کام کرتی ہیں، رپورٹ

لشکر جھنگوی، سپاہ صحابہ پنجاب میں آزادانہ کام کرتی ہیں، رپورٹ

لشکر جھنگوی، سپاہ صحابہ پنجاب میں آزادانہ کام کرتی ہیں، رپورٹ
کاؤنٹر ٹیررازم ڈیپارٹمنٹ پنجاب کی 15 روزہ جائزہ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ لشکر جھنگوی اور سپاہ صحابہ سمیت کالعدم تنظیموں نے آزادانہ طور پر مختلف شہروں میں اہل تشیع کے خلاف 47 کارروائیاں کی ہیں۔
اسلام ٹائمز۔ پنجاب حکومت کی جانب سے دہشت گردوں اور مختلف فرقہ وارانہ گروپوں کے خلاف کریک ڈاؤن کے دعوؤں کے باوجود پنجاب پولیس کے کاؤنٹر ٹیررازم ڈیپارٹمنٹ کی خفیہ رپورٹ میں یہ انکشاف کیا گیا ہے کہ صوبے بھر میں لشکر جھنگوی اور سپاہ صحابہ آزادی کے ساتھ کارروائیاں کرتے ہیں۔ کاؤنٹر ٹیررازم ڈیپارٹمنٹ پنجاب کی 15 روزہ جائزہ رپورٹ (16 سے 28 فروری 2013ء) میں کہا گیا ہے کہ لشکر جھنگوی اور سپاہ صحابہ سمیت کالعدم تنظیموں نے آزادانہ طور پر مختلف شہروں میں اہل تشیع کے خلاف 47 کارروائیاں کی ہیں۔ ان کارروائیوں میں دہشت گردی کی مختلف کارروائیاں بھی شامل ہیں، تاہم مختلف علاقوں کی پولیس نے ان تنظیموں کے خلاف کوئی قانونی کارروائی نہیں کی۔ اس حوالے سے اہل سنت والجماعت اور سپاہ صحابہ نے شیعہ مکتبہ فکر کے افراد کے خلاف لاؤڈ اسپیکر اور نفرت انگیز تقریروں کا سہارا لیا۔

کاؤنٹر ٹیررازم کا محکمہ 2010ء سے پہلے کریمنل انوسٹی گیشن ڈیپارٹمنٹ کہلاتا تھا۔ صوبائی اور شہری پولیس کے محکموں پر مشتمل اس ادارے کا بنیادی کام دہشت گردی، اقدام قتل، آرگنائزڈ کرائم اور فرقہ وارانہ واقعات کی تحقیقات کرنا ہے۔ سی ٹی ڈی پنجاب کا سب سے بڑا مقصد دہشت گردی کے خلاف جنگ، دہشت گردوں، فرقہ وارانہ عناصر اور جنگجوؤں کے کوائف اکٹھے کرنا اور اس حوالے سے جائزہ رپورٹیں مرتب کرنا ہے۔ ایک ایسی ہی رپورٹ کے مطابق اہل سنت والجماعت اور سپاہ صحابہ پاکستان نے کل 47 کارروائیوں میں سے تحریک جعفریہ پاکستان، سپاہ محمد پاکستان اور مجلس وحدت مسلمین کے خلاف مختلف شہریوں میں 39 کارروائیاں کیں۔ اس سلسلے میں سب سے زیادہ کارروائیاں فیصل آباد میں 23، ملتان میں 19، سرگودھا میں 18، بہاولپور میں 14، لاہور میں 13، راولپنڈی میں 11، ڈی جی خان میں 10، گوجرانوالہ میں 9، شیخوپورہ 5 جبکہ ساہیوال میں 4کارروائیاں کی گئیں۔

About The Author

Number of Entries : 6115

Leave a Comment

You must be logged in to post a comment.

© 2013

Scroll to top