صالحی، شام کی حمایت علاقے کی سکیورٹی کے لئے مفید Reviewed by Momizat on . اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیرخارجہ علی اکبر صالحی نے کہا ہےکہ علاقے کے تمام ملکوں کی جانب سے متحدہ شام کی حمایت علاقے کی سکیورٹی کے لئے بے حد مفید ہوسکتی ہے۔ ابن اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیرخارجہ علی اکبر صالحی نے کہا ہےکہ علاقے کے تمام ملکوں کی جانب سے متحدہ شام کی حمایت علاقے کی سکیورٹی کے لئے بے حد مفید ہوسکتی ہے۔ ابن Rating:
You Are Here: Home » Urdu - اردو » صالحی، شام کی حمایت علاقے کی سکیورٹی کے لئے مفید

صالحی، شام کی حمایت علاقے کی سکیورٹی کے لئے مفید

صالحی، شام کی حمایت علاقے کی سکیورٹی کے لئے مفید
اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیرخارجہ علی اکبر صالحی نے کہا ہےکہ علاقے کے تمام ملکوں کی جانب سے متحدہ شام کی حمایت علاقے کی سکیورٹی کے لئے بے حد مفید ہوسکتی ہے۔

ابنا: علی اکبر صالحی نے جدہ میں الحیات اخبار سے گفتگومیں کہا کہ تمام ملکوں کو ایران کی طرح شام کی حکومت ، اتحاد اور یکجہتی کی حمایت کرنی چاہیے تاکہ اس سے علاقے کی سکیورٹی کو فائدہ پہنچے۔ علی اکبر صالحی نے شام کی تقیسم یا سیاسی اختلافات کو ہوا دینے کی بابت خبردار کرتے ہوئے کہا کہ شام کے حالات علاقے پر بری طرح ا ثرانداز ہوں گے اور اس سے بڑے مسائل پیدا ہوجائيں گے۔ انہوں نے کہا کہ شام کی حکومت اور مخالفین کو مذاکرات کرنا چاہئیے اور نئے آئين کو منظوری دے کر عبوری حکومت تشکیل دینی چاہیے ۔ انہوں نے کہا کہ شام کے عوام کے حق خود ارادیت کا احترام کیا جائے اور باہر سے شام کے لئے فیصلے نہ کئےجائیں۔اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ نے کہا کہ ایران یہ امید کرتا ہے کہ شام کے بحران کو مفاہمت آمیز طریقے پر حل کرنے کے سلسلے میں امریکہ اور روس کے مواقف میں قربت آئے گي۔ ادھر اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکر ڈاکٹر علی لاریجانی نے کہاکہ مغرب ممالک علاقے کی قوموں کےخلاف سازشوں کے تحت شام میں دہشتگردوں کی مالی اور فوجی حمایت کررہے ہیں۔ ڈاکٹر لاریجانی نے آج پارلیمنٹ کے کھلے اجلاس میں شام کے بحران اور بعض مغربی ملکوں کی جانب سے اس بحران کو پرامن طریقوں سے حل کرنے کے اعتراف کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ مغربی ممالک دوبرس کی خانہ جنگي اور دسیوں ہزار افراد کے مارے جانے کے بعد اب یہ اعتراف کررہے ہیں کہ شام کے بحران کو پرامن طریقوں سے حل کیا جاسکتا ہے کیونکہ انہیں اب یہ معلوم ہوچکا ہے کہ شام میں ان کے سارے ہتھکنڈے ناکام ہوچکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بعض علاقائي ممالک جو شام میں قتل عام اور تباہی کی مغرب کی سازشوں میں شریک ہیں انہیں اپنی کارکردگي کا جواب دینا ہوگا۔ ڈاکٹر لاریجانی نے کہا کہ مسلمانوں کی ہمت سے اسلامی بیداری اپنے حتمی نتیجے تک ضرور پہنچے گي جو علاقے سے سامراج اور اس کے پٹھوؤں کو بے دخل کرنا ہے اور آزاد مشرق وسطی وجود میں آئے گا۔

About The Author

Number of Entries : 6115

Leave a Comment

You must be logged in to post a comment.

© 2013

Scroll to top