سعودی عرب میں شیعہ نوجوان کی شہادت Reviewed by Momizat on . سعودی عرب کے شہر قطیف میں اس ملک کے سیکیورٹی دستوں نے ۱۹ سالہ نوجوان ’’ علی حسن المحروس‘‘ کو گولیوں کا نشانہ بنا کر شہید کر دیا۔ اہلبیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ سعو سعودی عرب کے شہر قطیف میں اس ملک کے سیکیورٹی دستوں نے ۱۹ سالہ نوجوان ’’ علی حسن المحروس‘‘ کو گولیوں کا نشانہ بنا کر شہید کر دیا۔ اہلبیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ سعو Rating:
You Are Here: Home » Urdu - اردو » سعودی عرب میں شیعہ نوجوان کی شہادت

سعودی عرب میں شیعہ نوجوان کی شہادت

سعودی عرب میں شیعہ نوجوان کی شہادت
سعودی عرب کے شہر قطیف میں اس ملک کے سیکیورٹی دستوں نے ۱۹ سالہ نوجوان ’’ علی حسن المحروس‘‘ کو گولیوں کا نشانہ بنا کر شہید کر دیا۔

اہلبیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ سعودی عرب کے شہر قطیف میں اس ملک کے سیکیورٹی دستوں نے ۱۹ سالہ نوجوان ’’ علی حسن المحروس‘‘ کو گولیوں کا نشانہ بنا کر شہید کر دیا۔
آل سعود کے سکیورٹی دستوں نے اس شہر کے بعض انقلابی لوگوں کے گھروں پر حملہ کر کے ایک شیعہ نوجوان کو گولیوں سے چھلنی کر دیا۔

واضح رہے کہ فروری ۲۰۱۱ سے سعودی عرب کے مشرقی علاقوں کے رہنے والے عوام حکومت کے ظلم و ستم سے تنگ آ کراحتجاجی مظاہرے کر رہے ہیں اور سعودی نظام حکومت میں اصلاح کے متقاضی ہیں۔ عوام کا مطالبہ ہے کہ ان کے ساتھ عدل و انصاف سے پیش آیا جائے اور ان کے دینی، سیاسی اور سماجی حقوق پامال نہ کئے جائیں جبکہ آل سعود رژیم انہیں مسلسل کچل رہی ہے۔ علماء اور سیاسی فعالیت کرنے والے افراد کو گرفتار کر کے جیلوں میں بند کر دیا ہے اور پر امن احتجاج کرنے والوں کو گولیوں کا نشانہ بنایا جاتا ہے۔
نومبر ۲۰۱۱ میں قطیف میں ہونے والے ایک احتجاجی مظاہرے کے دوران پولیس نے فائرنگ کرکے پانچ افراد کو شہید اور متعدد کو زخمی کر دیا تھا۔
اطلاعات کے مطابق ۴۰ ہزار سیاسی فعال آل سعود کی کال کوٹھریوں میں بند ہیں جن میں سے اکثر کو بغیر کسی جرم کے قید کر رکھا ہے۔

About The Author

Number of Entries : 6115

Leave a Comment

You must be logged in to post a comment.

© 2013

Scroll to top