ایرانی صدر کا ایٹمی پروگرام پر بیان مثبت ہے، شام کے پُرامن حل کی طرف بڑھ رہے ہیں، جان کیری Reviewed by Momizat on . واشنگٹن میں صحافیوں سے گفتگو میں امریکی وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ اب جبکہ دنیا نے دیکھ لیا ہے کہ امریکہ فوجی کارروائی روک کر پُرامن حل کیطرف بڑھ رہا ہے۔ اب عالم واشنگٹن میں صحافیوں سے گفتگو میں امریکی وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ اب جبکہ دنیا نے دیکھ لیا ہے کہ امریکہ فوجی کارروائی روک کر پُرامن حل کیطرف بڑھ رہا ہے۔ اب عالم Rating:
You Are Here: Home » Urdu - اردو » ایرانی صدر کا ایٹمی پروگرام پر بیان مثبت ہے، شام کے پُرامن حل کی طرف بڑھ رہے ہیں، جان کیری

ایرانی صدر کا ایٹمی پروگرام پر بیان مثبت ہے، شام کے پُرامن حل کی طرف بڑھ رہے ہیں، جان کیری

ایرانی صدر کا ایٹمی پروگرام پر بیان مثبت ہے، شام کے پُرامن حل کی طرف بڑھ رہے ہیں، جان کیری
واشنگٹن میں صحافیوں سے گفتگو میں امریکی وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ اب جبکہ دنیا نے دیکھ لیا ہے کہ امریکہ فوجی کارروائی روک کر پُرامن حل کیطرف بڑھ رہا ہے۔ اب عالمی برادری کا امتحان شروع ہوگیا ہے کیونکہ شام کے کیمیائی ہتھیاروں کو مکمل طور پر تلف کیا جانا ممکن ہے۔
ایرانی صدر کا ایٹمی پروگرام پر بیان مثبت ہے، شام کے پُرامن حل کی طرف بڑھ رہے ہیں، جان کیری اسلام ٹائمز۔ امریکی وزیر خارجہ جان کیری کا کہنا ہے سلامتی کونسل کو اگلے ہفتے شام کے کیمیائی ہتھیاروں کو تلف کرنے کے قرارداد منظور کر لینی چاہیئے، ایرانی صدر ڈاکٹر حسن روحانی کا ایٹمی پروگرام پر بیان مثبت ہے۔ امریکی دارالحکومت واشنگٹن میں میڈیا بریفنگ کے دوران وزیر خارجہ جان کیری کا کہنا تھا کہ امریکہ اور روس کے معاہدے کو نافذ کرنے کے لئے سنجیدہ کوششیں کرنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ دنیا کو پیغام دینا چاہتے ہیں کہ وقت کم ہے اور بحث میں الجھنے کی بجائے عملی اقدامات کریں۔ ایران کے حوالے سے امریکی وزیر خارجہ نے کہا کہ ایرانی صدر ڈاکٹر حسن روحانی کا ایٹمی پروگرام پر بیان مثبت ہے لیکن دیکھنا ہوگا کہ اس کے لئے ایران نے کیا عملی اقدامات کئے ہیں۔

امریکی وزیرِ خارجہ جان کیری نے کہا ہے کہ شام کے کیمیائی ہتھیاروں کے معاملے کو اب زیادہ طول نہ دیا جائے۔ سلامتی کونسل اگلے ہفتے میں ہی قرارداد منظور کرے۔ واشنگٹن میں صحافیوں سے گفتگو میں امریکی وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ سلامتی کونسل، شام کے کیمیائی ہتھیاروں کیخلاف اگلے ہفتے لازمی طور پر متفقہ قرارداد لانے کیلئے تیار رہے۔ انھوں نے کہا کہ اقوام متحدہ کی حتمی رپورٹ سے ثابت ہوچکا ہے کہ دمشق کے نواح میں کیمیائی حملے کے پیچھے شامی حکومت ملوث تھی، جس میں سارین گیس کا استعمال کرکے بیگناہ شہریوں کو ہلاک کیا گیا۔ جان کیری نے واضح کیا کہ اب جبکہ دنیا نے دیکھ لیا ہے کہ امریکہ فوجی کارروائی روک کر پُرامن حل کی طرف بڑھ رہا ہے۔ اب عالمی برادری کا امتحان شروع ہوگیا ہے کیونکہ شام کے کیمیائی ہتھیاروں کو مکمل طور پر تلف کیا جانا ممکن ہے۔ امریکی وزیر خارجہ نے کہا کہ ایران کے صدر حسن روحانی کے حالیہ بیانات مثبت ہیں۔

دوسری جانب فرانس کے صدر اولاندے کا کہنا ہے کہ وہ ایران کے صدر حسن روحانی کی درخواست پر آئندہ ہفتے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس کی سائیڈ لائن پر ان سے ملاقات کریں گے، جس میں شام کے بحران پر تبادلہ خیال کیا جائیگا جبکہ ایرانی وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل بان کی مون سے ملاقات کی ہے، جس میں دمشق کی صورتحال پر بھی گفتگو ہوئی۔ اُدھر شام کے نائب وزیرِاعظم نے کہا ہے کہ ملک میں خانہ جنگی ایک ایسی جگہ پہنچ گئی ہے جہاں کوئی بھی فریق اتنا طاقتور نہیں ہے کہ جیت سکے۔

About The Author

Number of Entries : 6115

Leave a Comment

You must be logged in to post a comment.

© 2013

Scroll to top