30مارچ کو سندھ حکومت کی نا اہلی اور قاتلوں کی عدم گرفتاری کے خلاف نمائش چورنگی سے وزیر اعلیٰ ہاؤس تک احتجاجی ریلی نکالی جائے گی ، Reviewed by Momizat on . صوبائی حکومت قیام امن میں ناکامی ک اعتراف کرتے ہو ئے فوری مستعفی ہو جائے ، مجلس وحدت مسلمین کراچی(پ ر)کراچی میں جاری مسلسل ٹارگٹ کلنگ ، شیعہ کمیونٹی کی نسل کشی صوبائی حکومت قیام امن میں ناکامی ک اعتراف کرتے ہو ئے فوری مستعفی ہو جائے ، مجلس وحدت مسلمین کراچی(پ ر)کراچی میں جاری مسلسل ٹارگٹ کلنگ ، شیعہ کمیونٹی کی نسل کشی Rating: 0
You Are Here: Home » Urdu - اردو » 30مارچ کو سندھ حکومت کی نا اہلی اور قاتلوں کی عدم گرفتاری کے خلاف نمائش چورنگی سے وزیر اعلیٰ ہاؤس تک احتجاجی ریلی نکالی جائے گی ،

30مارچ کو سندھ حکومت کی نا اہلی اور قاتلوں کی عدم گرفتاری کے خلاف نمائش چورنگی سے وزیر اعلیٰ ہاؤس تک احتجاجی ریلی نکالی جائے گی ،

30مارچ کو سندھ حکومت کی نا اہلی اور قاتلوں کی عدم گرفتاری کے خلاف نمائش چورنگی سے وزیر اعلیٰ ہاؤس تک احتجاجی ریلی نکالی جائے گی ،
صوبائی حکومت قیام امن میں ناکامی ک اعتراف کرتے ہو ئے فوری مستعفی ہو جائے ، مجلس وحدت مسلمین
کراچی(پ ر)کراچی میں جاری مسلسل ٹارگٹ کلنگ ، شیعہ کمیونٹی کی نسل کشی او ر تھر پارکر میں ایک سو سے زائد معصوم بچوں کے ہلاکت کے ذمہ دار وزیر اعلیٰ سند ھ فوری مستعفی ہو جائیں ، سندھ حکومت کی ہٹ دھرمی جاری رہی تو حکومت مخالف تحریک چلانے کا اعلان کر دیں گے ، کراچی میں خون کی ہولی اب مذید برداشت نہیں کی جاسکتی ،ہمارے شہداء کے قاتلوں کے نشان وزیر اعلیٰ ہاؤس سے جا کر ملتے ہیں ، 30مارچ کو سندھ حکومت کی نا اہلی اور قاتلوں کی عدم گرفتاری کے خلاف نمائش چورنگی سے وزیر اعلیٰ ہاؤس تک احتجاجی ریلی نکالی جائے گی ، ان خیالات کا اظہارمجلس وحدت مسلمین کراچی ڈویژن کے رہنما سید علی حسین نقوی ، علامہ مبشر حسن اور شبیر حسینی نے احتجاجی مظاہروں سے خطاب کر تے ہو ئے کیا ،ان احتجاجی مظاہروں کا اعلان کراچی میں جاری ٹارگٹ کلنگ ، شیعہ کمیونٹی کی نسل کشی ،تھر میں معصوم بچوں کی ہلاکت اور سندھ حکومت کی مجرمانہ غفلت کے خلاف مجلس وحدت مسلمین صوبہ سندھ کی جانب سے کیا گیا تھا ، اس سلسلے میں مرکزی احتجاجی مظاہرہ بعد نماز جمعہ خوجہ مسجد کھارادر پر منعقد کیا گیا، اس موقع پر مظاہرین نے ہاتھوں میں بینر اور پلے کا رڈ اٹھا رکھے تھے جن پر سندھ حکومت مردہ باد، دہشت گردی مردہ باد، طالبان مردہ باداورامریکہ اسرائیل مردہ باد کے نعرے درج تھے ۔
شرکائے احتجاج سے خطاب کر تے ہو ئے علی حسین نقوی کا کہنا تھا کہ سندھ حکومت صوبے بھر میں دہشت گردی کی روک تھام میں ناکام ہو چکی ہے ، کراچی سمیت سندھ بھر میں کہیں حکومتی رٹ نظر نہیں آتی ، کراچی تو دہشت گردوں کی جنت بن چکا ہے، 6ماہ سے جاری ٹارگٹڈ آپریشن کے نتائج کہیں نظر نہیں آتے، کراچی کے شہری خوف و سراسیمگی کی کیفیت میں زندگی گذارنے پر مجبور ہو چکے ہیں ، عوام کی مشکلات و پریشانیوں سے صرفِ نظر کیئے ہو ئے حکمران اپنے محلات میں آسائش و آرام کی زندگی گذار رہے ہیں ، جب کہ اسی صوبے میں ایک سو سے زائد معصوم بچے بھوک و افلاس کے نتیجے میں اپنی جان گوا بیٹھے ہیں ۔
علامہ مبشر حسن کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی کی سندھ حکومت اپنے قائدین کی روش سے رو گرداں ہو چکی ہے، ایک طرف تو بلاول بھٹو زرداری طالبان دہشت گردوں کو مولا جٹ بن کر للکارتے ہو ئے دھائی دیتے ہیں تو دوسری طرف سندھ کے اندرونی اضلاع میں اسی پیپلز پارٹی کے رہنما ان کالعدم جماعتوں کی پشت پناہی میں مصروف دکھائی دیتے ہیں ، کراچی میں جاری ٹارگٹڈ آپریشن کے نتیجے میں بقول قانون نافذ کر نے والے اداروں کے گیارہ ہزار گرفتار دہشت گردوں میں سے کسی ایک کو بھی نشان عبرت کیوں نہیں بنایا گیا۔سندھ حکومت کو آپریشن کے نام پر جاری ڈرامہ اب بند کر دینا چاہئے جس سے عوام کی جان و مال کے تحفظ میں کوئی بہتری نہ ہو ، کراچی میں ایک درجن افراد کا روز موت کے گھاٹ اتر جانا سندھ حکومت کی منہ پر تماچے کے مترادف ہے ، ہمارے شہداء کے قاتلوں کے نشان وزیر اعلیٰ ہاؤس سے جا کر ملتے ہیں ، 30مارچ کو سندھ حکومت کی نا اہلی اور قاتلوں کی عدم گرفتاری کے خلاف نمائش چورنگی سے وزیر اعلیٰ ہاؤس تک احتجاجی ریلی نکالی جائے گی

About The Author

Number of Entries : 6115

Leave a Comment

You must be logged in to post a comment.

© 2013

Scroll to top