مراجع عظام شیعیت کی پہچان ہیں، امریکہ اگر خوفزدہ ہے تو مرجعیت سے ہے، علامہ خورشید احمد جوادی Reviewed by Momizat on . جعفریہ علماء کونسل کے سربراہ کا اسلام ٹائمز کیساتھ خصوصی انٹرویو میں کہنا تھا کہ اگر ہماری قیادت نے ہمیں حکم دیا تو پھر شیعہ قوم اس سے دریغ نہیں کریگی۔ مقامات م جعفریہ علماء کونسل کے سربراہ کا اسلام ٹائمز کیساتھ خصوصی انٹرویو میں کہنا تھا کہ اگر ہماری قیادت نے ہمیں حکم دیا تو پھر شیعہ قوم اس سے دریغ نہیں کریگی۔ مقامات م Rating: 0
You Are Here: Home » Urdu - اردو » مراجع عظام شیعیت کی پہچان ہیں، امریکہ اگر خوفزدہ ہے تو مرجعیت سے ہے، علامہ خورشید احمد جوادی

مراجع عظام شیعیت کی پہچان ہیں، امریکہ اگر خوفزدہ ہے تو مرجعیت سے ہے، علامہ خورشید احمد جوادی

مراجع عظام شیعیت کی پہچان ہیں، امریکہ اگر خوفزدہ ہے تو مرجعیت سے ہے، علامہ خورشید احمد جوادی
جعفریہ علماء کونسل کے سربراہ کا اسلام ٹائمز کیساتھ خصوصی انٹرویو میں کہنا تھا کہ اگر ہماری قیادت نے ہمیں حکم دیا تو پھر شیعہ قوم اس سے دریغ نہیں کریگی۔ مقامات مقدسہ ہمارا اثاثہ ہیں اور انہی کی وجہ سے یہ زمین قائم و دائم ہے۔ نام نہاد دولت اسلامیہ عراق و الشام جو حال ہی میں بنی ہے، یہ القاعدہ سے بھی بڑے دہشتگرد ہیں۔ داعش مقامات مقدسہ کو ختم کرنے کیلئے وجود میں آئی ہے لیکن شیعہ سنی ملکر انکی سازش کو ناکام بنائیں گے۔ جسطرح انہیں شام میں شکست فاش کا سامنا کرنا پڑا ہے یہ عراق میں بھی ذلیل و رسوا ہونگے۔ دنیا کی کوئی طاقت ان مقامات مقدسہ کو انشاءاللہ نقصان نہیں پہنچا سکے گی۔
مراجع عظام شیعیت کی پہچان ہیں، امریکہ اگر خوفزدہ ہے تو مرجعیت سے ہے، علامہ خورشید احمد جوادی علامہ خورشید احمد جوادی ممبر مشاورتی کونسل تحریک نفاذ فقہ جعفریہ پاکستان کے عہدہ پر فائز ہیں، بنیاد تعلق پنڈ گاکھڑا تحصیل و ضلع ہریپور سے ہے۔ جعفریہ علماء کونسل کی سربراہی کے ساتھ ساتھ آپ متعدد دوسری شیعہ تنظیموں جن میں تنظیم المدارس جعفریہ کے سیکرٹری اطلاعات اور وحدت علماء امامیہ کے ایڈیشنل سیکرٹری کے فرائض بھی سرانجام دے رہے ہیں۔

اسلام ٹائمز: ملک میں اس وقت دہشت گردوں کے خلاف پاک فوج کا آپریشن ضرب عضب جاری ہے، لیکن اصل دہشت گرد تکفیری ملک میں دندناتے پھر رہے ہیں، کیا وجہ ہے کہ حکومت اصل دہشت گردوں کے خلاف آپریشن نہیں کر رہی۔؟
علامہ خورشید احمد جوادی: دراصل اس حکومت نے کسی بھی دور میں حقیقی دہشت گردوں کے خلاف آپریشن کیا ہی نہیں ہے۔ ابھی جو پاک فوج کا وزیرستان میں آپریشن ضرب عضب جاری ہے موجودہ حکومت اس کے حق میں نہیں تھی۔ پاک آرمی نے خود بڑھتی ہوئی دہشت گردی پر قابو پانے کے لئے اس آپریشن کا آغاز کیا حکومت اب اس کے خلاف بات کرنے سے گریزاں ہے لیکن خوشدلی سے آپریشن کے فیصلہ کو قبول نہیں کر رہی۔ یہ بات بالکل درست ہے کہ تکفیری ملک بھر میں سرعام دندناتے پھر رہے ہیں۔ کالعدم جماعتوں کے یہاں جلسے ہوتے ہیں، جن میں تکفیری دہشت گردوں کو مدعو کیا جاتا ہے۔ خصوصاً تشیع کے خلاف یہ تکفیری گروہ اپنے خبث باطنی کا مظاہرہ کرتے ہیں۔
یہ امر انتہائی افسوس ناک ہے کہ میڈیا ان تکفیری کالعدم دہشت گرد جماعتوں کو بھرپور کوریج دیتا ہے، گذشتہ دنوں کالعدم جماعت کا ایک سرغنہ کھلابٹ ہری پور میں آیا اور اس نے تشیع کے خلاف ہرزہ سرائی کی۔ ہم نے اسے باقاعدہ چیلنج کیا ہے کہ آو بکواس بازی کے بجائے ہمارے ساتھ بحث مباحثہ کرو۔ نون لیگ حکومت کی کالعدم جماعتوں کو خاص سرپرستی حاصل ہے۔ آپ کو درجنوں ایسے ایم پی اے و ایم این اے گنوا سکتا ہوں جو کہ اس دہشت گرد ٹولے کے پشت پناہ ہیں۔ ان کا اصل ہدف سعودی عرب کے ایجنڈے کا نفاذ ہے چونکہ ان کی فنڈنگ بھی سعودیہ سے ہی ہوتی ہے۔

اسلام ٹائمز: تکفیری گروہ مقامات مقدسہ کی جانب بڑھنے کی ناپاک جسارت کرنا چاہتے ہیں، اس موقع پر جوانوں کو کیا تلقین کرنا چاہیں گے۔؟
علامہ خورشید احمد جوادی: مومن کا بہترین ہتھیار دعا ہے۔ حالات ایسے نہیں ہیں کہ ہم کھلم کھلا وہاں جاکر جہاد کرسکیں، لیکن اگر ہماری قیادت نے ہمیں حکم دیا تو پھر شیعہ قوم اس سے دریغ نہیں کرے گی۔ مقامات مقدسہ ہمارا اثاثہ ہیں اور انہی کی وجہ سے یہ زمین قائم و دائم ہے۔ نام نہاد دولت اسلامیہ عراق و الشام جو حال ہی میں بنی ہے، یہ القاعدہ سے بھی بڑے دہشت گرد ہیں۔ داعش مقامات مقدسہ کو ختم کرنے کے لئے وجود میں آئی ہے لیکن شیعہ سنی مل کر ان کی سازش کو ناکام بنائیں گے۔ جس طرح انہیں شام میں شکست فاش کا سامنا کرنا پڑا ہے یہ عراق میں بھی ذلیل و رسوا ہوں گے۔ دنیا کی کوئی طاقت ان مقامات مقدسہ کو انشاءاللہ نقصان نہیں پہنچا سکے گی۔

اسلام ٹائمز: عراقی صورتحال کے پیش نظر آیت اللہ سید علی سیستانی کا فتویٰ انتہائی اہمیت کا حامل ہے، جس نے حالات کا پانسہ پلٹ کر رکھ دیا، کیا پاکستان کی صورتحال کہ جس میں شیعہ قتل عام معمول بن چکا ہے، کسی فتویٰ کے ذریعہ بہتری پیدا ہونے کا امکان موجود ہے۔؟
علامہ خورشید احمد جوادی: یہ ملت تشیع کی خوش قسمتی ہے کہ ہم نظام مرجعیت کے ساتھ جڑے ہوئے ہیں، مراجع عظام شیعیت کی پہچان ہیں، امریکہ اگر خوفزدہ ہے تو مرجعیت سے ہے۔ امام خمینی (رہ) کا انقلاب اس وجہ سے آیا کہ لوگ آپکو نائب امام سمجھتے تھے۔ پاکستان میں بھی انقلاب کے نعرے اٹھ رہے ہیں لیکن خمینی (رہ) جیسا انقلاب پیدا نہیں کیا جاسکتا۔ پاکستان کی صورتحال میں علماء حقہ کا کردار اس مصرع کا مصداق ہونا چاہیے کہ
نکل کا خانقاہوں سے ادا کر رسم شبیری (ع)
یہی میرا پیغام ہے۔

About The Author

Number of Entries : 6115

Leave a Comment

You must be logged in to post a comment.

© 2013

Scroll to top